ایک شخص نے ایک نیا مکان خریدا 

*ایک شخص نے ایک نیا مکان خریدا! اسمے پھل باغ بھی تھا. پڈوس کا مکان پرانا تھا اور اس میں بہت سے لوگ رہتے تھے.*
*کچھ دن بعد اس نے دیکھا کہ پڑوس کے مکان سے کسی نے بالٹی بھر كوڑا، اس کے گھر کے دروازے پر ڈال دیا ہے.*
*شام کو اس شخص نے ایک بالٹی لی، اس میں تازہ پھل رکھے اور اس گھر کے دروازے کی گھنٹی بجائی.*
*اس گھر کے لوگ بے چین ہو گئے اور وہ سوچنے لگے، کہ وہ ان سے صبح کے واقعہ کے لئے لڑنے آیا ہے ..!*
*لہذا وہ پہلے ہی تیار ہو گئے اور برا بھلا بولنے لگے.*
*مگر جیسے ہی انہوں دروازہ کھولا، وہ حیران ہوگئے. رسیلی تازہ پھل کی بھری بالٹی کے ساتھ،*
*مسکراہٹ چہرے پر لئے نیا پڑوسی، سامنے کھڑا تھا ...! سب حیران تھے.*
.
.
.
.
.
*اس نے کہا - جو میرے پاس تھا، وہی میں آپ کے لیے لا سکا ...!*
*سچ ہے جس کے پاس جو ہے، وہی وہ دوسرے کو دے سکتا ہے ..!*
*ذرا سوچیں، کہ آپ کے پاس دوسروں کے لئے کیا ہے ..؟
 
Zubair Khan Afridi Diary【••Novel ღ ناول••】. Zubair Khan Afridi
knowledgemoney